آریہ محلہ نزد لیاقت باغ راولپنڈی میں ایک نجی تعلیمی ادارہ صدیق پبلک سکول کے پرنسپل آصف محمود محکمہ تعلیم اور محکمہ صحت کے بے جا دباو کی وجہ سے موقع پر جانبحق

تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم اور محکمہ صحت کی ٹیم نے ایک بچے کی خسرہ ویکسین نہ لگنے پر آ صف محمود کو اس قدر ہراساں کیا کہ آصف محمود اس پریشر کو برداشت نہ کر سکے اور موقع پر ہی حرکت قلب بند ہونے سے جان کی بازی ہار گئے ۔صدیق پبلک سکول انتظامیہ، صدر پنجاب آل پاکستان پرائیویٹ سکولز اینڈ کالجز ایسوسی ایشن راجہ الیاس کیانی، اور ایپسکا کے دیگر عہدیداران نے اس پر شدید دکھ کا اظہار کیا اور حکام سے لواحقین کو فوری انصاف دلانے کا مطالبہ کیا۔اس سلسلہ میں ایپسکا کی ٹیم اور صدیق پبلک سکول کی انتظامیہ نے اشرف ہراج کی قیادت میں راجہ بشارت صوبائی وزیر قانون اور سی پی او راولپنڈی سے یہ بھی مطالبہ کیا ھے کہ آصف کی موت کا سبب بننے والی ٹیم کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے۔اور یہ یقین دہانی بھی کرائی جائے کہ آئندہ ایسا معاملی پیش نہیں آئے گا۔بیشتر پرنسپل حضرات کا کہنا تھا کہ اگر انصاف نہ کیا گیا تو پھر آئندہ کسی بھی سکول میں محکمہ صحت کی ٹیمیز کو وزٹ نہیں کرنے د

Skip to toolbar